in

شرابی کا جنازہ ْ ۔۔۔

ایک دفعہ ایک بزرگ فرماتے ہیں کہ مجھے رات کے ایک پہر جنگل میں جانے کا تجسس ہوا ۔ میں جب جنگل میں گیا تو میں نے دیکھا کہ ایک شخص کو چار بندے اٹھائے کسی جانب لے جا رہے ہیں ۔ میں آگے بڑھ کر پو چھا کہ کیا تم نے اس کو قتل کر کے ٹھکانے لگا نے جا رہے ہو ۔ انہوں نے بتایا کہ نہیں ہم مزدور ہیں ہم اس کو قبرستان لے کر جا رہے ہیں وہاں اس کی ماں ہمیں مزدوری دے گی ۔ہم اس کو دفن کر دے گے ۔نہیں یقین تق آپ ہمارے ساتھ چلیں ۔
وہ بزرگ بھی ان کے ساتھ چلا گیا ۔ جب اس نے قبر کے پاس ماں کو پایا تو حیران رہ گیا ، اس نے پو چھا کہ ماں جی آپ اس وقت

بیٹے کو کیوں دفن کر رہی ہیں ۔ اس نے بتایا کہ میرا بیٹا شرابی تھا ۔اور ہر وقت نشے کی حالت میں رہتا تھا ، تو اس نے مجھے مرتے وقت نصیحت کی جب میں مر جاو تو میری لاز کو گھر کے ارد گرد گھمانا ۔ تاکہ سب کے لیے عبرت بن سکے ۔ اور مجھے رات کے وقت قبرستان میں دفنانا تاکہ دن میں لوگ مجھے برا بھلا ہی کہیں گے ۔ اور میری قبر میں اپنا ایک بال بھی رکھ دینا رب سفید بھالوں کی بہت حیا کرتا ہے ۔
وپ بزرگ آدمی نے اس کا جنازہ پڑھایا ، اور اس کو دفن کر کے قبر بند کرنے لگا تو اچانک قبر میں سے اس کا ہاتھ باہر آیا۔ اور سب حیران رہ گئے ، اس نے کہا کہ بے شک وہ رب سب کو معاف کرنے والا ہے اور سب کی مہربانیوں کو جانتا ہے ۔ یہ کہہ کر وہ پھر سے اللہ کو پیارا ہو گیا اور بزرگ نے پھر اس کی قبر بند کر دیْ ۔۔۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

دروازہ نہیں کھولیں گے ،،،

9.ہر ایک چیز کی قیمت اس کی منڈی میں لگتی ہے۔